A wall paper for your computer screen

Advertisements

2 Comments Add yours

  1. مستقبل کے اندیشے اور ماضی کے پچھتاوے حال میں جینے نہیں دیتے۔ حال جو کبھی مستقبل تھا اور اگلے لمحے ماضی ہو رہا ہے۔ انسان کے سارے اندرونی خوف گذشتہ اور آئندہ کل سے پیدا ہوتے ہیں۔ جونہی اسے اس خوف سے نجات ملے گی یہ ‘آج’ کو جینا سیکھ جائے گا۔

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s